447

فاٹاانضمام اور نوکریوں سے برطرفی

فاٹا انضمام میں خاسہ دار اور لیویز فورس کے مستقلی کے مسئلے کے بعد پولیٹیکل محررز کے مستقلی کا بھی سنگین مسئلہ بن گیا ہے قبائلی اضلاع میں تمام محکموں میں پولیٹیکل فنڈ سے تعینات کئے گئے تمام افراد کو ایک کال پر نوکریوں سے برخاست کئے گئے ہیں جس کے بعد مختلف محکموں میں کام کرنے والوں کو شدید مالی مشکلات کا سامنا ہیں ۔دیگر اضلاع کے طرح ضلع کرم میں بھی 32پولیٹیکل محررز کو ایک کال پر ختم کرکے ان کو گھر بھیج دئے گئے ۔ضلع کرم کے ڈپٹی کمیشنر نے حالیہ دنوں میں ایک کال پر بغیر کسی جاری کئے ہوئی اعلامیہ کے پولیٹیکل فنڈز سے بھرتی کئے ہوئے تمام محرروں کو برطرف کرنے کے بعد ایک اورمسئلہ بنادیا۔برطرف کئے گئے پولیٹیکل محررز عبدالرحمن، سید خیل، عارف، شاہ حسین اور دیگر نے پشاور ڈوڈے کو بتایاکہ فاٹا اصلاحات کیلئے بنائی گئی فاٹا ریفامز کمیٹی کے کئے گئے وعدے جو قومی اسمبلی سے بھی پاس ہوئے کہ قبائلی کے لوگوں کے مراعات اور پولیٹیکل انتظامیہ نظام کے نوکریوں کو بھی ریگولر کرینگے جن میں خاصہ دار فورس اور محرران کو جو ریگولر نہیں ہیں ریگولر کرینگے لیکن آج خاصہ دارفورس ایک نئے ایکٹ کے ساتھ ریگولر کئے جارہے ہیں جبکہ ان کے ساتھ 32 محرران کو بغیر اعلامہ کی جاری کئے ہوئی ایک کال پر برطرف کئے گئے جو پچھلے 16 سالوں سے کرم پولیٹیکل ایجنٹ فنڈ سے تنخواہ لیتے تھے انہوں نے بتایاکہ انضمام کے فورآبعد ہمارے پہلے تنخواہیں بند کردئے گئے جو اس وقت بھی ہم ڈیوٹی کررہے تھے اور بعد میں مکمل فارغ کردئے گئے انہوں نے کہاکہ ہم انضمام کیلئے خوش تھے لیکن انضمام کے بعد تو ہمارا روزگار چلا گیا جو ہمارے ساتھ ظلم اور ناانصافی ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم نے بہت نازک اور سخت حالات میں اپنے ملک کی خدمت کی ہیں جس کا ہمیں آج فارگ کرنے کا صلہ دیا گیا۔انہوں نے کہاکہ پولیٹیکل فنڈ سے بہت سے سرکاری اسکولوں میں اساتذہ بھی تعینات کئے تھے جن کو مستقل کرنے کیلئے لائحہ عمل تیار کیا جارہاہیں لیکن ہمارے سننے والا کوئی نہیں ہے ۔فارغ کئے گئے محررز کا کہناتھا کہ ہمیں تعیناتی کے وقت پولیٹیکل ایجنٹ سے لیٹرز جاری کئے گئے تھے لیکن آج ہمیں فارغ کرنے کیلئے نہ لیٹر جاری کیا گیا ہے اور نہ ہی ڈی سی نے ہمیں خود بتایاہے بلکہ ایک جونیئر کلرک کے ذریعے تمام فارغ کئے گئے محررز کو موبائل فون ڈیوٹی نہ کرنے کو کہا گیاہے جو کہ ایک غیر قانونی اقدام ہے انہوں نے کہا کہ ہم نے سولہ سال سے ہر قسم کے قربانیاں دی ہیں اور اب عمررسید ہونے کے بعد کسی دوسری نوکری کیلئے اپلائی بھی نہں کرسکتے جبکہ نوکری نہ ہونے کی وجہ سے آمدن کے دروازے بند ہوگئے ہیں اور آمدن نہ ہونے کی وجہ سے شدید مالی مشکلات درپیش ہیں انہوں نے وزیر اعظم عمران خان، وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا اور دیگر متعلقہ حکام سے تمام فارغ کئے گئے پولیٹیکل محرروں کو دوبارہ بحالی کیلئے احکامات جارے کرنے کا مطالبہ کیا ہے.

Share this story
  • 7
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
    7
    Shares

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں