277

محنت کش خواتین کو بہتر مارکیٹ کی تلاش

خواتین کے عالمی دن کے سلسلے میں محکمہ سماجی بہود ،اسپیشل ایجوکیشن اور خواتین کے ترقی کے زیر اہتمام گھر یلو ہنر مند خواتین کی تیار کردہ مصنوعات کا نشترہال میں ایک روزہ نمائش کا اہتمام کیاگیا جس میں مختلف اضلاع سے تعلق رکھنے والے خواتین نے حصہ لیا

۔

فرخندجبین گھر میں کپڑے اور جیولری تیا رکرتی ہے جس کو نہ صرف مقامی مارکیٹ بلکہ دوسرے شہروں کو مانگ کے مطابق بھجتے ہیں ۔ اُن کے بقول ہنر مند خواتین تیارہ کردہ مصنوعات کے مارکیٹنگ سب سے بڑا مسئلہ ہے جس کے وجہ سے نہ صرف معاوضہ کم ملتاہے بلکہ روزگار بھی محدود ہوجاتا ہے

صوبائی وزیر اطلاعات شوکت یوسفزئی نے نمائش میں بحیثیت مہمان خصوصی شرکت کیا ۔ اُنہوں نے کہا کہ موجود حکومت اُن تمام وسائل کو بروئے کار لارہے جس سے ہنر مند خواتین کے حوصلہ آفزائی ہوسکے ، تاکہ خواتین معاشی طور پر مستحکم ہوسکے۔اُن کے بقول کام کرنے والے خواتین کے حقوق کے لئے قوانین موجود ہے جس کو مزید موثر بنانے کے لئے ترجیحی بنیادوں پر کام جاری ہے ۔

نمائش میں نہ صرف خواتین کے تیارکردہ مصنوعات کی نمائشی ہوئی بلکہ سرکاری اورغیر سرکاری ادارے جو خواتین کے حقوق کے لئے کام کررہے ہیں نے بھی اپنے معلوماتی مواد رکھ سٹال لگایا ۔زرمینہ اورکزئی خواتین روزگار ادارے کے بانی ممبر ہے جو خواتین کو روزگار کے موقع فراہم کرنے اور گھریلو خواتین کے تیارہ کردہ مصنوعات کے مارکٹنگ میں اُن مدد کرتا ہے ۔

قیمتی پتھر وں کو جیولر ی میں استعمال کرکے مختلف اشیاء نمائش کے لئے پیش کئے گئے جس میں مختلف کالجز، یونیورسٹیز اور میڈیکل کالج کے طلبہ ء نے کافی دلچسپی لی۔

نمائش عالمی سطح پر خواتین کے حقوق کے لئے کام کرنے والے اداروں کے مالی معاونت سے منعقد کیا گیا ۔ نعمت اللہ کا تعلق ڈیر ہ اسماعیل خان سے اور اپنے علاقے میں گھریلوی خواتین کے تیارہ کردہ روایتی اشیاء نمائش میں رکھے ہوئے ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ اس قسم کے تقریبات سے ہنر مند خواتین کے حوصلہ آفزائی ہوگئی اور محنت کا بہتر ین صلہ ملنے کے مواقعیں بڑھ جائینگے ۔ اُن کے بقول کراچی ، لاہور ، اسلام آباد، مردان ، سوات ، پشاور اور دیگر شہروں میں بڑے شاپنگ مال اورکمپنیوں کو تیار اشیاء بھجتے۔

حال ہی میں تعینات صوبائی محتسب رخشندہ نازنے کہاکہ صوبائی حکومت کے ساتھ مختلف سطح پر خواتین قوانین کو موثر بنانے کے لئے اقدامات ہورہے جس میں کام کرنے والے خواتین کو ہر سطح پر تحفظ کویقینی بنایاجائیگا۔ نمائش میں خیبر پختونخوا کے مختلف اضلاع سے تعلق رکھنے والے خواتین نے اپنے علاقوں کی نمائندگی کیں۔روبینہ محکمہ سوشل ویلفئرچترال کے آفسر ہے اور اُس سٹال کے نگرانی کررہاہے جس میں اُن خواتین کے تیارکردہ اشیاء رکھے ہوئے جو ان کے محکمے سے مختلف شعبوں میں تربیت مکمل کرچکے ہیں۔

Back to Conversion Tool

Share this story
  • 83
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
    83
    Shares

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں